اللہ کا حکم ہے کہ سچی گواہی دو،جھوٹی گواہی دینا اصل ظلم ہے


g

اسلام آباد:‌سپریم کورٹ نے سزائے موت کے قیدی قمرزماں کو 12 سال بعدبری کردیا،دوران سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ استغاثہ کیس ثابت کرنے میں ناکام رہا،ہمیں یقین ہے گواہ جھوٹے بنائے گئے،جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ اللہ کاحکم ہے کہ سچی گواہی دو،جھوٹی گواہی دینااصل ظلم ہے، سچی گواہی کے بغیرنظام عدل نہیں چل سکتا۔واضح رہے کہ ملزم پر

2005 میں غلام صابرکوگوجرانوالہ میں قتل کرنے کاالزام تھااورقمرزماں کی سزائے موت ہائیکورٹ نے عمرقیدمیں تبدیل کی تھی۔