پاک فوج اور اغواء کاروں کے درمیان سخت مقابلے کے بعد بازیاب ہونے والے کینیڈین شہری نے پاکستان میں کیا دیکھو


m

واشنگٹن : بازیاب ہونے والے کینیڈین شہری جوشوا بوائل نے اپنی بازیابی میں مدد پر پاک فوج، پاکستانی اداروں، حکومت اور عوام کی تعریف کی ہے۔بازیابی کے بعد اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ انہیں بچانے کے لیے پاکستانی سیکیورٹی اہل کار ان کے اور اغوا کاروں کے درمیان آ گئے تھے اور انہیں بچا لیا۔افغانستان میں 5 سال کے دوران مجھے کوئی افغان اہل کار نظر نہیں آیا، افغانستان کا بہت بڑا علاقہ طالبان

اور جرائم پیشہ عناصر کے قبضے میں ہے وہاں حکومت نام کی کوئی چیز نہیں۔جوشوا کا کہنا تھا کہ پاکستان پر حقانی نیٹ ورک کی مدد کا الزام لگایا جاتا ہے مگر انہوں نے خود دیکھا کہ پاک فوج نے اغوا کاروں کی گاڑی گولیوں سے چھلنی کر دی تھی۔پاکستان میں داخل ہوتے ہی پاک فوج نے آپریشن کے ذریعے مجھے موت کے منہ سے نکالا۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کے برعکس افغانستان میں 5 سال کے دوران انہیں کوئی افغان اہل کار نظر نہیں آیا، افغانستان کا بہت بڑا علاقہ طالبان اور جرائم پیشہ عناصر کے قبضے میں ہے۔

mm