عرب ممالک اسرائیل کیساتھ مل کر خفیہ طور پر کیا کر رہے ہیں؟ مسلمانوں کی بے حسی جان کر آپ بھی افسوس کریں گے. معروف پاکستانی فاسٹ بالر رومان رئیس کی شادی کی تصاویر منظر عام پر آگئی. سینما میں فلم دیکھنے کے بعد خاتون پاگل ہو گئی، ہسپتال منتقل فلم میں ایسا کیا تھا کہ اس کا یہ حال ہوا؟. معروف پاکستانی اداکارہ نادیہ جمیل کیساتھ برطانیہ میں گوروں نے ایساانتہائی شرمناک کام کر دیا کہ جان کر ہر پاکستان غصے میں آگ بگولہ ہو جائے. سعودی عرب نے ایک لاکھ سے زائد لوگوں کو حج سے روک دیا، وجہ ایسی کہ جان کر آپ بھی کہیں گے کہ ’’جو ہوا ٹھیک ہوا‘‘. پاکستان کو ایٹمی ہتھیاروں سے محروم کرنے کیلئے امریکہ ، اسرائیل اور بھارت کیا ’’ڈرٹی گیم ‘‘کھیل رہے ہیں. یہ پڑھنے کے بعد آپ پیٹ کے بل ہرگز نہیں سوئیں گے. عمران خان کے خلاف توہین عدالت کی باضابطہ کارروائی شروع ،الیکشن کمیشن نے عمران خان کو کیا کہا کہ؟. افسوس ناک خبرعامر خان کو بری بیماری لاحق ہو گئی ،اب وہ پہچانے نہیں جارہے ہیں؟. پاکستان کے مایہ ناز بلے باز عمران نذیر تو آپ کو یاد ہوں گے آج کل وہ کہاں اور کس حال میں ہیں؟

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کا عید اجتماعات پر دھاوا، فائرنگ سے درجنوں افراد زخمی


kashmir سری نگر (ویب ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج نے عید کے روز بھی ظلم و بربریت کا سلسلہ جاری رکھا اور فائرنگ کر کے درجنوں افراد کو زخمی کر دیا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق سری نگر، سوپور اور اننت ناگ سمیت متعدد علاقوں میں نماز عید کے بعد کشمیریوں کی بڑی تعداد سڑکوں پر نکل آئی اور بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج کیا۔ قابض افواج نے پرامن مظاہرین پر پیلٹ گنز سے فائرنگ کر دی اور اور آنسو گیس شیل بھی فائر کئے۔

اس دوران بھارتی سیکیورٹی فورسز اور کشمیریوں نوجوانوں کے درمیان شدید جھڑپیں بھی ہوئیں اور کشمیری نوجوانوں نے بھارت سے آزادی اور سبز ہلالی پرچموں کے ساتھ پاکستان کے حق میں نعرے بھی لگائے۔ بھارتی فورسز کی فائرنگ کے نتیجے میں ایک صحافی سمیت درجنوں کشمیری زخمی ہوگئے جبکہ قابض افواج نے حریت رہنما سیدعلی گیلانی، یاسین ملک، میر واعظ عمر فاروق کو بھی گھروں میں نظر بند کر دیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق پلوامہ کے علاقے میں برہان وانی اور دیگر حریت پسند کمانڈر کو خراج تحسین پیش کرنے کے لیے ان کے پوسٹرز چسپاں کیے گئے، جنہیں دیکھ کر قابض افواج میں خوف کی لہر دوڑ گئی۔مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ روز بھی بھارتی فوج نے سری نگر میں فائرنگ کے تبادلے کے بعد دو نوجوانوں کو شہید کردیا تھا۔ بھارت کی ریاستی دہشت گردی کی تازہ لہر میں درجنوں کشمیریوں کی شہادت کے باعث عید کے موقع پر بھی فضا سوگوار رہی اور نماز عید کے بعد کشمیر کی آزادی و بھارتی قبضے کے خاتمے کے لیے خصوصی دعائیں کی گئیں۔ اس موقع پر ہزاروں شہدا کی قربانیوں کو بھی یاد کیا گیا جنہوں نے آزادی کی جدوجہد کے دوران اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کردیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس جولائی میں تحریک آزادی کے نوجوان کمانڈر برہان مظفر وانی کی شہادت کے بعد سے مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی تحریک زور پکڑ چکی ہے جبکہ بھارتی فورسز کی سفاکانہ کارروائیوں میں اب تک 200 سے زائد کشمیر شہید اور ہزاروں افراد معذور و زخمی ہو چکے ہیں۔ صرف رواں برس مئی کے مہینے میں بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی کے نتیجے میں 28 کشمیری شہید ہوئے۔